0

بائیڈن انتظامیہ کا کانگریس پر اسرائیل جنگ میں ٹینک کے گولوں کی منظوری کے لیے دباؤ

واشنگٹن :بائیڈن انتظامیہ نے کانگریس سے کہا ہے کہ وہ غزہ میں حماس کے خلاف اپنے حملے میں استعمال کرنے کے لیے اسرائیل کے مرکاوا ٹینکوں کے لیے 45,000 گولوں کی فروخت کی منظوری دے .
یہ درخواست اس وقت کی جا رہی ہے جب جنگ میں امریکی ہتھیاروں کے استعمال کے بارے میں خدشات بڑھ رہے ہیں۔جیسا کہ اسرائیل نے 7 اکتوبرکے بعد سے فلسطینی انکلیو میں ہزاروں شہری مارے دیے ہیں۔
صدر جوبائیڈن نے یوکرین اور اسرائیل کے لیے فنڈنگ کے لیے دو مختلف درخواستوں میں فنڈ کی ڈیمانڈ کی ہے. جس میں پہلی درخواست ممکنہ طور پر $500 ملین سے زیادہ مالیت کی اور دوسری $110.5 بلین کی اضافی درخواست ہے ۔ امریکی ساختہ ہتھیاروں کے استعمال پر تنازعہ کے اعتراضات کے باوجود ، ایک امریکی اہلکار اور محکمہ خارجہ کے ایک سابق اہلکار جوش پال نے کہا کہ امریکی محکمہ خارجہ کانگریس کی کمیٹیوں پر زور دے رہا ہے کہ وہ اس فنڈ کی جلد منظوری دیں۔
کمیٹیوں کے پاس اسرائیل کے کیس کا جائزہ لینے کے لیے 20 دن ہیں۔جوبائیڈن حکومت زور دے رہی ہے کہ جلد از جلد یہ معاملہ سیٹل ہو جائے.
یاد رہے کہ جوش پال نے اکتوبر میں اسرائیل کے لیے انتظامیہ کی “اندھی حمایت” کرنے پر احتجاجاً اسٹیٹ ڈیپارٹمنٹ سے استعفیٰ دے دیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں