0

پاکستان کا اقوام متحدہ سے غزہ میں اسرائیلی جنگی جرائم کے احتساب کا مطالبہ

اقوام متحدہ: غزہ میں فلسطینی عوام اور شہرکے انفراسٹرکچر پر اسرائیل کے انتھک حملوں کی مذمت کرتے ہوئے، پاکستان نے اسرائیلی قابض افواج کو محصور علاقے میں جنگی جرائم کے لیے جوابدہ ٹھہرانے کا مطالبہ کیا ہے۔
اقوام متحدہ میں پاکستان کے قائم مقام مستقل مندوب، سفیر محمد عثمان اقبال جدون نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں کہا کہ ہم اسرائیل کی جانب سے طاقت کے اندھا دھند استعمال کی شدید اور واضح طور پر مذمت کرتے ہیں،”
“انسانی امداد” پر ایک مباحثے میں خطاب کرتے ہوئے، انہوں نے کہا کہ شہریوں کو نشانہ بنانے کے علاوہ، اسرائیل کے دیگر اقدامات جیسے ضروری انسانی امداد کی روک تھام؛ مقبوضہ علاقے میں لوگوں کی جبری بے گھری، “بین الاقوامی انسانی قانون کی صریح خلاف ورزیاں ہیں اور یہ جنگی جرائم اور انسانیت کے خلاف جرائم کے مترادف ہیں اور نسل کشی کے جرم کے مترادف ہو سکتے ہیں۔”
جنرل اسمبلی میں پاکستانی ایلچی نے اسرائیل کے ہاتھوں اقوام متحدہ کی ایجنسیوں اور اداروں کے عملے، انسانی ہمدردی کے کام کرنے والے کارکنوں اور صحت کی دیکھ بھال کرنے والے کارکنوں کے قتل اور زخمی ہونے پر بھی گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس کے اتنے بہادر اہلکار اتنے مختصر عرصے میں اپنی جانوں سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں۔
سفیر جدون نے مزید کہا کہ “ہمیں اسکی اجتماعی مذمت کرنی چاہیے اور اسرائیلی قابض افواج کو جوابدہ بنانے کا اجتماعی مطالبہ کرنا چاہیے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں