0

آرمینیا اور آذربائیجان میں حالات معمول پر لانے کے لیے قیدیوں کا تبادلہ

آرمینیا اور آذربائیجان نے کئی دہائیوں پرانے تنازعے میں فیصلہ کن پیش رفت حاصل کرنے کے تین ماہ بعد اپنے تعلقات کو معمول پر لانے کی طرف ایک قدم برحاتے ہوئے اپنی سرحد پر جنگی قیدیوں کا تبادلہ کیا ہے۔
اس تبادلہ میں آذربائیجان نے 2020 کے آخر میں پکڑے گئے 32 آرمینیائی باشندوں کو رہا کیا جبکہ آرمینیا نے اپریل سے زیر حراست دو آذربائیجانی فوجیوں کو رہا کیا۔
آذربائیجان کے ریاستی کمیشن برائے جنگی قیدیوں نے بھی تبادلہ کے بارے میں ایک بیان جاری کیا۔بین الاقوامی کمیٹی آف ریڈ کراس کی طرف سے ان کی صحت کا معائنہ کرنے اور مثبت نتیجہ اخذ کرنے کے بعد آرمینیائی فوجیوں کو آرمینیا کے حوالے کر دیا گیا۔
روس کی سرکاری خبر رساں ایجنسی TASS کے مطابق دونوں پڑوسی اپنی سرحد سے فوجیوں کے انخلاء پر بھی بات چیت کر رہے ہیں۔
ان ممالک نے گزشتہ ہفتے قیدیوں کے تبادلے کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ “تعلقات کو معمول پر لانے اور خودمختاری اور علاقائی سالمیت کے اصولوں کے احترام کی بنیاد پر امن معاہدے تک پہنچنے کے اپنے ارادے کی دوبارہ تصدیق کی”۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں