0

امریکہ اور چین کی افواج کے درمیان برف پگھلنے لگی، اعلیٰ ترین سطح کے رابطے بحال

امریکی چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف جنرل چارلس برائون کی چینی ہم منصب لیو زینلی کو وڈیو کال
امریکہ اور چین کی افواج میں اعلیٰ سطح کے رابطے بحال ہوئے ہیں۔ امریکہ کے چیئرمین جوائنٹس چیفس آف اسٹاف کمیٹی جنرل چارلس برائون نے چینی ہم منصب سے بات کی ہے۔ جنرل لیو زینلی سے جنرل چارلس برائون کی گفتگو سے اعلیٰ سطح کے رابطے بہتر اور مضبوط بنانے کی راہ ہموار ہوئی ہے۔

امریکہ اور چین کی افواج کے تعلقات میں خرابی 2022 میں اس وقت پیدا ہوئی تھی جب امریکی ایوانِ نمائندگان کی اس وقت کی اسپیکر نینسی پیلوسی نے تائیوان کا دورہ کیا تھا۔ واضح رہے کہ چین کی حکومت تائیوان کو اپنا منحرف صوبہ قرار دیتی ہے۔

گزشتہ ماہ امریکہ اور چین کے صدور نے ایک ملاقات میں دونوں افواج کے درمیان اعلیٰ ترین سطح کے رابطے بحال کرنے پر رضامندی ظاہر کی تھی۔ امریکہ اور چینی جرنیلوں کے درمیان بات چیت وڈیو کانفرنسنگ کال پر ہوئی۔ رابطہ امریکی جرنیل نے کیا۔

سی این این کے مطابق اس وڈیو کال کے دوران جنرل چارلس برائون نے دونوں ممالک کی افواج کے درمیان اعلیٰ سطح کے رابطوں اور مختلف بین الاقوامی معاملات میں اتفاق رائے کی اہمیت پر روشنی ڈالی۔

جوائنٹس اسٹاف کے ترجمان کیپٹن جیریل ڈورسے کے مطابق جنرل چارلس برائون نے کہا کہ اہم اور حساس معاملات میں اعلٰی ترین سطح کے رابطے ناگزیر ہیں تاکہ غلط فہمی اور بدگمانی سے بچا جاسکے۔ ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ غلط فہمیوں کی راہ مسدود کرنے کے لیے چینی فوج کا اعلیٰ ترین سطح پر رابطے میں رہنا لازم ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں