0

علاقائی جنگ کا خدشہ، بین الاقوامی عدالت کا اسرائیل سے فوری جنگ بندی کا مطالبہ

جنوبی افریقہ نے اسرائیلی مظالم کے خلاف بین الاقوامی عدالت سے رجور کرلیا
متعدد خبر رساں اداروں اور علامی ماہرین نے اسرائیل نیوز چینل ”چینل 12“ کے حوالہ دیتے ہوئے دعویٰ کیا ہے بین الاقوامی عدالت نے اسرائیل سے فوری طور پر فائر بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

بین الاقوامی عدالت انصاف (آئی سی جے)، جسے بعض اوقات عالمی عدالت انصاف کے نام سے بھی پکارا جاتا ہے، ملکوں کے درمیان تنازعات کو حل کرنے کے لیے اقوام متحدہ کا ایک ادارہ ہے۔

دوسری جانب اسرائیلی اخبار ”ہاریٹز“ کا کہنا ہے کہ ’اس معاملے سے نمٹنے والے ایک سینئر قانونی ماہر نے حالیہ دنوں میں آئی ڈی ایف کے سربراہ بشمول چیف آف اسٹاف ہرزل حلوی کو خبردار کیا ہے کہ اس بات کا حقیقی خطرہ ہے عدالت اسرائیل کو جنگ بندی کیلئے حکم امتناعی جاری کرے گی‘

قانونی ماہر نے اسرائیلی حکام کو کہا کہ اسرائیل عدالت کے فیصلوں کا پابند ہے۔

جمعہ کو جنوبی افریقہ نے بین الاقوامی عدالت سے ایک فوری حکم نامے کی درخواست کی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ اسرائیل حماس کے ساتھ جنگ میں 1948 کے نسل کشی کنونشن کے تحت اپنی ذمہ داریوں کی خلاف ورزی کر رہا ہے۔

غزہ فلسطینی سرزمین ہے اور رہے گی، امریکا

جنوبی افریقہ کئی عشروں سے اسرائیل کے زیر قبضہ علاقوں میں ریاست کے قیام کے فلسطینی مؤقف کی حمایت کر رہا ہے۔

وہ فلسطینیوں کے حالات کو نسل پرستی کے دور میں جنوبی افریقہ میں سیاہ فام اکثریت سے مشابہہ قرار دیتا ہے۔ اسرائیل اس موازنے کی سختی سے تردید کرتا ہے۔

چینل 12 کے مطابق بین الاقوامی عدالت برائے انصاف (آئی سی جے) نے یہ مطالبہ دنیا کو ’علاقائی جنگ سے بچانے کے لیے‘ کیا ہے۔
جنوبی افریقہ کے بین الاقوامی تعلقات عامہ اور تعاون کے محکمے کے ترجمان کلیسن مونیلا ”ایکس“ پر جاری اپنی ایک پوسٹ میں کہا ہے کہ جنوبی افریقہ کی نمائندگی کرنے والے وکلاء 11 اور 12 جنوری کو طے شدہ سماعت کے لیے تیاری کر رہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں