0

اسرائیلی فوج غزہ میں اپنی حدود سے تجاوز کر رہی ہے؛ امریکی صدر بول پڑے

واشنگٹن: امریکا کے صدر جو بائیڈن نے کہا ہے کہ غزہ میں اسرائیلی فوج کی کارروائیاں ضرورت سے زیادہ اور اپنے حد سے تجاوز کرنا ہے۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق میڈیا سے گفتگو میں ایک سوال کے جواب میں امریکی صدر جوبائیڈن کا مزید کہنا تھا کہ غزہ میں جنگ کے آغاز سے ہی شہریوں کی حفاظت اور اس کی ہولناکی کو کم کرنے کی کوشش کی ہے اور اب مکمل جنگ بندی کے لیے اسرائیل پر سخت دباؤ ڈال رہے ہیں۔

امریکی صدر جوبائیڈن نے صحافی کو کہا کہ میرے خیال میں، جیسا کہ آپ جانتے ہیں، غزہ میں اسرائیل کا فوجی ردعمل شدید اور اپنی حدود سے تجاوز پر مبنی رہا ہے۔

غزہ تک امدادی سامان کی ترسیل کے حوالے سے امریکی صدر کا کہنا تھا کہ مصری صدرعبد الفتاح السیسی پہلے تو غزہ میں انسانی امداد کے داخلے کے لیے رفح کراسنگ کھولنا نہیں چاہتے تھے تاہم میں نے انھیں راضی کرلیا۔

امریکی صدر نے مزید کہا کہ میں نے اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو سے بھی بات کی کہ وہ اسرائیل کی حدود میں واقع کراسنگ کو بھی کھولیں تاکہ امدادی سامان کی ترسیل ہوسکے۔

ٰیاد رہے کہ امریکی صدر جوبائیڈن ان دنوں اپنی انتخابی مہم میں مصروف ہیں اور انھیں غزہ میں اسرائیل کی حمایت کرنے پر بھی کافی دباؤ کا سامنا ہے جو صدارتی الیکشن پر اثر انداز ہوسکتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں